Uncategorized

پنجاب حکومت 530 خرچ کرکے بھی امن قائم کرنے میں ناکام ہے، طاہرالقادری

اسلام آباد: ڈاکٹرطاہرالقادری کا کہنا ہے کہ گزشتہ سات سال میں پنجاب حکومت 530 ارب روپے صرف امن و امان کو برقرار رکھنے کے لئے خرچ کئے اس کے باوجود جرائم کی شرح میں 110 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

وفاقی دارالحکومت میں انقلاب مارچ کے دھرنے میں شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ آپ سب اپناریکارڈ جمع کرائیں، میں چاہتا ہوں کہ میں اورمیری نسلیں اس دھرنے کے شرکاء کی جدوجہد اورقربانیوں کو یادرکھیں۔

انہوں نے اعلان کیا کہ جب کبھی میں اور میری نسلیں سفر کریں گی تو صرف ان لوگوں کے گھروں میں قیام کریں گی جو انقلاب مارچ میں شریک تھے چاہے وہ کچا مکان ہی کیوں نہ ہو، انہوں تحریک کے لیڈران کو حکم دیا کہ جوان لوگوں سے بے وفائی کرے گااس کو تحریک سے خارج کردیا جائے گا۔

ان کا کہنا تھا کہ انقلاب مارچ کے بیشترمقاصد حاصل کئے جاچکے ہیں اورآج ملک کے ہرشخص کی زبان پرانقلاب کانعرہ ہے، پیٹ بھروں کو انقلاب کی ضرورت نہیں ہوتی۔

انہوں نے کہا کہ آپ لوگوں کی کاوشوں سے پاکستان کی خوابیدہ قوم بیدارہوچکی ہے، انقلاب آچکا ہے اور اس کا سہرا دھرنے کے شرکاء کے سر جاتا ہے۔

انہوں کہا کہ پاکستان کے آئین کا آرٹیکل 9 کے تحت ہرشہری کے جان و مال اورعزت و آبروکو تحفظ حاصل ہے لیکن اس شعبے میں مسلم لیگ ن صرف بجٹ مختص کرکے استعمال کرتی ہے لیکن کسی کو یہ تحفظات حاصل نہیں ہیں۔ گزشتہ سات سال میں پنجاب کے عوام کی جان و مال اور عزت و آبروکے لئے 530 ارب روپے خرچ کرنے کے باوجود جرائم کی شرح میں 110 فیصد اضافہ ہوا ہے۔

ڈاکٹرطاہرالقادری کا کہنا تھا کہ یہ وہ بنیادی وجوہات ہیں جن کے سبب عوام انقلاب کے لئے اٹھ کھڑے ہوئے ہیں۔

Comments

comments

Copyright © 2016 ARYNEWS.tv

To Top